Posted by: Fayyaz Malik | ستمبر 13, 2007

ماہ رمضان مبارک

 ماہ رمضان مبارک

Happy Ramazan

 ماہ رمضان مبارک

Posted by: Fayyaz Malik | ستمبر 7, 2007

ندیا رو رو گیت سنائے

ندیا رو رو گیت سنائے

گا گا کے سگر مل جا ئے

ندیا پریم کہانی ہے

مورکھ تجھ کو سمجھ نہ آئے

جن راہوں سے گزرے ندیا

سندر آشا پھول کھلا ئے

سب کی پیاس بجھا کر واصف

ندیا آپ پیاسی رہ جائے

Posted by: Fayyaz Malik | ستمبر 7, 2007

میں نے یہ بلاگ کیوں شروع کیا?

 

کیوںکہ میں نے واصف علی واصف کو پڑھا ہے اور ان سے بہت کچھ سیکھا ہی

ُٰٰٰٰوہ مختصر مگر بہت اعلی بات کرتے ہیں . میں نے چاہا کہ جس طرح بھی ہو سکے ان کی باتیں زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچاؤں ….

چنانچہ یہ ایک معمولی سی کوشش کی ہے.

ُُدعا کیجیے گا کہ میں اس پر پورا اتر سکوں.

Posted by: Fayyaz Malik | اگست 16, 2007

سارے جہاں سے اچھا ہندوستاں ہمارا

 Its the Global concept of homeland for Muslims. As Muslims are along the both sides of border. And being Muslim whole world is the country to Muslims.

سارے جہاں سے اچھا ہندوستاں ہمارا
ہم بلبليں ہيں اس کي، يہ گلستاں ہمارا
Better than the entire world, is our Hindustan,
We are its nightingales, and it (is) our garden abode

غربت ميں ہوں اگر ہم، رہتا ہے دل وطن مي
سمجھو وہيں ہميں بھي، دل ہو جہاں ہمارا
If we are in an alien place, the heart remains in the homeland,
Know us to be only there where our heart is.

پربت وہ سب سے اونچا، ہمسايہ آسماں کا
وہ سنتري ہمارا، وہ پاسباں ہمارا
That tallest mountain, that shade-sharer of the sky,
(It) is our sentry, (it) is our watchman

گودي ميں کھيلتي ہيں اس کي ہزاروں ندياں
گلشن ہے جن کے دم سے رشک جناں ہمارا
In its lap frolic those thousands of rivers,
Whose vitality makes our garden the envy of Paradise

ے آب رود گنگا، وہ دن ہيں ياد تجھ کو؟
اترا ترے کنارے جب کارواں ہمارا
O the flowing waters of the Ganges, do you remember that day
When our caravan first disembarked on your waterfront?

مذہب نہيں سکھاتا آپس ميں بير رکھنا
ہندي ہيں ہم وطن ہے ہندوستاں ہمارا
Religion does not teach us to bear ill-will among ourselves
We are of Hind, our homeland is Hindustan

يونان و مصر و روما سب مٹ گئے جہاں سے
اب تک مگر ہے باقي نام و نشاں ہمارا
In a world in which ancient Greece, Egypt, and Rome have all vanished without trace
Our own attributes (name and sign) live on today

کچھ بات ہے کہ ہستي مٹتي نہيں ہماري
صديوں رہا ہے دشمن دور زماں ہمارا
Such is our existence that it cannot be erased
Even though, for centuries, the cycle of time has been our enemy.

اقبال! کوئي محرم اپنا نہيں جہاں ميں
معلوم کيا کسي کو درد نہاں ہمارا
Iqbal! We have no confidant in this world
What does any one know of our hidden pain?

Posted by: Fayyaz Malik | جون 22, 2007

Book: Bharay Bharolay

Punjabi Poetry by Wasif Ali Wasif

 

The Complete Book can be read by Clicking on the book Thumbnail.

This Books contains and covers the Punjabi Alphabets in a  great manner.

The Good, Sufi Poetry.

The Beauty of Poetry at Its Best by Wasif Ali Wasif.

The Link of the Complete Book is also here

http://www.brain.com.pk/~mrryk/bary.html

Older Posts »

زمرے

Follow

Get every new post delivered to your Inbox.